مئی ڈے کو جلوس نکالنے کی اجازت نہےں : ہائی کورٹ

شہر مےں سےاسی ہوےا غےر سےاسی تنظےموں کی جانب سے جلوس نکالنے کی اجازت نہےں دی جاسکتی

مئی ڈے کو جلوس نکالنے کی اجازت نہےں : ہائی کورٹ

 بنگلور:( پی اےن اےن ) آل انڈےا ٹرےڈ ےونےن کانگرےس ( سی آئی ٹی ےوسی) کی جانب سے ےکم مئی کو مئی ڈے کے موقع پر شہر مےں جلوس نکالنے کےلئے دائر کی گئی عرضی کو کرناٹکا ہائی کورٹ نے مسترد کردےا۔ اور کہاکہ شہر مےں سےاسی ہوےا غےر سےاسی تنظےموں کی جانب سے جلوس نکالنے کی اجازت نہےں دی جاسکتی ۔ اس سلسلے مےں ےونےن کے وکےلوں نے مطالبہ کےا کہ جس طرح کرگا کا جلوس نکالنے کی اجازت دی گئی تھی ۔ اسی طرز ےر ہمےں بھی اجازت دی جائے کےونکہ ےوم مزدور عالمی سطح پر منعقد کےا جاتا رہا ہے۔ اس کا جواب دےتے ہوئے سرکاری وکےل نے کہاکہ کرگا کا جلوس نکالنے کےلئے خصوصی شرائط کے ساتھ اجازت ڈوےژن بےنج نے دی تھی ۔اور جلوس صرف رات مےں مخصوصی سٹرکوں پر نکالنے کےلئے کہا تھا مگر ےہ رےالی دن مےں نکالی جانے والی ہے۔ اس کےلئے ہرگز اجازت نہےں دی جاسکتی جسٹس آر دےودرشن نے کہاکہ مجوزہ جلوس کے بغےر جلوس کے بغےر پےدل چلتے ہوئے سٹی رےلوے اسٹےشن ےا ٹاون ہال سے رضاکار نکل جائےں تو اس کو اجازت کی ضرورت نہےں وہ فرےڈم پاک کے پاس جمع ہوسکتے ہےں۔ےونےن وکےلوں نے عدالت کو بتاےا کہ وہ لوگ بغےر شورشرا بے کے علی الصباح اےک کلومےٹر چل کر جاسکتے ہےں ۔ اس سلسلے مےں3مارچ کو عدالت نے اےک پی آئی ےل پر اپنا ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا تھا کہ ےہ بات ےقےنی بنائی جائے کہ کوئی بھی جلوس چاہے و ہ احتجاجی ہو ےا سےاسی بنگلور مےں منعقد ہورہا ہے تو چاہئے کہ وہ صرف فرےڈم پارک کی حد تک ہے محدود کےا جاسکتا ہے۔ سٹرکوں پر کسی بھی قسم کے جلوس کی اجازت نہےں دی جاسکتی ۔