خاکی چڈی ، کالی ٹوپی ، ہاتھوں میں گن ،یہ ہٹلر کا ڈریس کوڈ ہے: بی کے ہری پرساد

ملک کی سالمیت کو برقرار رکھتے ہوئے اور اس کو کوئی نقصان نہ پہنچے اس طرح ہماری پارٹی کام کرتی ہے

خاکی چڈی ، کالی ٹوپی ، ہاتھوں میں گن ،یہ ہٹلر کا ڈریس کوڈ ہے: بی کے ہری پرساد

بنگلور :24اپریل (پی اےن اےن ) آزادی کی جدوجہد میں کانگریس شامل تھی ، ملک کی سالمیت کو برقرار رکھتے ہوئے اور اس کو کوئی نقصان نہ پہنچے اس طرح ہماری پارٹی کام کرتی ہے۔ لیکن بی جے پی صرف سماج میں دشمنی ، نفرت پیدا کرکے اقتدار پر قابض ہونے کا منصوبہ بناتی ہے، اس بات کا الزام کانگریس لیڈر اور ودھان پریشد میں حزب مخالف لیڈر بی ، کے ، ہری پرساد نے لگایا۔کمٹہ کے لکشمی بائی ب±رڈیکر ہال میں ابھیندنا کمیٹی کے زیراہتمام منعقدہ تہنیتی اجلاس میں تہنیت قبول کرنے کے بعد حاضرین سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ دشمنی ، نفرت ، حسد پیدا کرنے والوں کو شکست دیں گے تو ہی ایسے تہنیتی پروگرام کامیاب ہوں گے۔ ہری پرساد نے اپنے خطاب میں بی جے پی اور آرایس ایس پر زبردست وار کرتےہوئے کہاکہ مہاتما گاندھی جی نے رام راجیا کا خواب دیکھاتھا لیکن بی جے پی والے رام مندر تعمیر میں مگن ہیں۔ بھارت میں کسی بھی طرح کا ظلم ،زور زبردستی نہیں ہوناچاہئے، رات کے اوقات میں ایک تنہا عورت سڑک پر چلنے کا ہم خواب دیکھتے ہیں لیکن بی جے پی والے ظلم، زور زبردستی ، نفرت کو مقصد بنارہے ہیں۔3500ذاتیں، 7دھرم، 3تہذیبوں پر مشتمل ہمارا ملک سب سے بڑا اور مقدس ملک ہے۔ سکیولرزم کی بنیاد پر ہم سب ایک ہوکر زندگی گزار رہے ہیں۔ بھارت جیسا بہترین دستور رکھنے والا کوئی دوسرا ملک نہیں ہے۔ مگر افسوس ! اسی ضلع سے دستور کی باتیں سنی جارہی ہیں اس کے بعد یہی آواز ناگپور میں سنی گئی۔ بی جےپی کا مقصد ہی یہی ہے کہ پسماندہ طبقات ہمیشہ غلام رہیں۔ دستور میں ترمیم یا تبدیلی کامعاملہ اسی کا شاخسانہ ہے۔ جس کی ہم کڑی مذمت کرتےہ یں۔ہری پرساد نے آرایس ایس کی دیش بھکتی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہاکہ ملک کی حفاظت کے لئے 50لاکھ کا عملہ ہے۔ سپاہی، پیارا ملٹری ، پولس یہ سب ملک کی حفاظت میں مصروف ہیں۔ کھاکی چڈی ، کالی ٹوپی ، ہاتھوں میں ڈنڈا لے کر یہ کیا ملک کی حفاظت کریں گے؟ کھاکی چڈی ، کالی ٹوپی اور ہاتھوں میں بندوق جرمنی والے ہٹلرکے فوجی استعمال کرتےتھے۔ہماری حکومت نے 20 سے زائد ڈیم تعمیر کئے ہیں جب کہ بی جے پی کی حکومت کو ایک ڈیم چھوڑئیے ایک تالاب کی تعمیر بھی ممکن نہیں ہوپائی ہے۔ اراضی سدھار قانون میں دولت مند ہی مالک بن گیا ہے۔ بس ، ریلوے ، ہوائی جہاز کا انتظام ہماری حکومت نے کیاتھا ، بہترین اسپتالوں کابھی انتظام کیا تھا۔ لیکن آج کے بعض نوجوان صرف مودی ، مودی کہتے ہیں تو تعجب ہوتا ہے۔انہوں نےکہاکہ ترقی صرف کانگریس سے ممکن ہے۔ سابق وزیر آر وی دیش پانڈے نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا۔ بی کے ہری پرساد ابھیندنا سمیتی کے صدر منجوناتھ نائک نے افتتاحی کلمات پیش کئے۔ڈائس پر سابق ارکان اسمبلی شاردا شٹی ، جے ڈی نائک ، آراین نائک، کے ایچ گوڈا، کانگریس ضلع صدر بھیمنانائک، رمانند نائک، مزمل قاضیا، بلاک کانگریس صدر وی ایل نائک سمیت کئی لیڈران موجود تھے۔ لوہیت نائک نے استقبال کیا تو پرشانت موڈلمنے ، شیلا میستا نے نظامت کی۔ وکیل آر جی نائک نے سپاس نامہ کی خواندگی کی سچن نائک نے شکریہ ادا کیا۔