چین تائیوان کی سیمی کنڈکٹر صنعتوں کو ہتھیانے کی فراق میں

چین تائیوان کی سیمی کنڈکٹر صنعتوں کو حاصل کرنے کے لیے اقتصادی جنگ لڑ رہا ہے۔ تائیوان سیمی کنڈکٹر صنعت کا سب سے بڑامرکز ہے

چین تائیوان کی سیمی کنڈکٹر صنعتوں کو ہتھیانے کی فراق میں

تائی پے۔ 29مارچ(۔پی اےن اےن) چین تائیوان کی سیمی کنڈکٹر صنعتوں کو حاصل کرنے کے لیے اقتصادی جنگ لڑ رہا ہے۔ تائیوان سیمی کنڈکٹر صنعت کا سب سے بڑامرکز ہے جو امریکہ کے بعد دوسرے نمبر پر سیمی کنڈکٹر بنانے والا ملک ہے۔ ہانگ کانگپوسٹ کی رپورٹ کے مطابق، تائیوان کی حکومت نے چین پر ٹیکنالوجی چوری کرکے اور ہنر مند انجینئروں کو چھین کر تائیوان کے ٹیک سیکٹر کے خلاف اقتصادی جنگ چھیڑنے کا الزام لگایا ہے۔تائیوان کے ایگزیکٹیو منسٹر لو پنگ چینگ نے الزام لگایا کہ بیجنگ تائیوان کے جدید ٹیکنالوجی کے عملے کو ا?مادہ کر رہا ہے اور قومی اہم ٹیکنالوجیز کی چوری میں ملوث ہے اور ضوابط کی خلاف ورزی کر رہا ہے اور وہ تائیوان میں غیر قانونی طور پر سرمایہ کاری اور کام کر رہا ہے جس سے قوم کو آئی ٹی سیکورٹی اور صنعت کی مسابقت میں بہت زیادہ نقصان ہو رہا ہے۔سیمی کنڈکٹرز یا ' چپس' تکنیکی اختراعات اور اقتصادی ترقی میں ضروری تعمیراتی بلاکس ہیں۔ یہ چپس تمام برقی آلات بشمول سمارٹ فونز، الیکٹرانک گاڑیاں، ہائپرسونک ہتھیاروں، ایئر شپس، پیس میکر وغیرہ میں ہر جگہ موجود ہیں۔کوانٹم کمپیوٹنگ، وائرلیس کمیونیکیشنز (5G) انٹرنیٹ ،مصنوعی ذہانت (AI) جیسی ابھرتی ہوئی نئی ٹکنالوجیوں کے ساتھ سیمی کنڈکٹرز کی مانگ ہمیشہ بڑھ رہی ہے، جن کے لیے انتہائی جدید سیمی کنڈکٹر آلات کی ضرورت ہوتی ہے۔امریکہ کئی دہائیوں سے سیمی کنڈکٹر کی صنعت میں پیش پیش رہا ہے، جس میں دنیا کے 15 بڑے سیمی کنڈکٹر اداروں میں سے 8 موجود ہیں۔ دی ہانگ کانگ پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق چین سیمی کنڈکٹرز کا ایک بڑا درآمد کنندہ ہے اور اپنی سپلائی کے لیے غیر ملکی مینوفیکچررز پر بہت زیادہ انحصار کرتا رہا ہے، خاص طور پر امریکہ پر۔چین اور امریکہ کے درمیان جاری تجارتی تنازعات نے بیجنگ کے لیے اپنی گھریلو سیمی کنڈکٹر صنعت کی ضروریات کو پورا کرنا مشکل بنا دیا ہے۔ امریکہ سخت لائسنسنگ پالیسیوں کے ساتھ سیمی کنڈکٹر ایکسپورٹ کنٹرول کو بھی سخت کر رہا ہے۔ تجارتی جنگ میں چین کی کمزوری اس کا اپنے مینوفیکچرنگ سیکٹر کی کارکردگی کو بڑھانے کے لیے سیمی کنڈکٹرز کی درآمدات پر انحصار ہے۔چینی حکومت نیشنل انٹیگریٹڈ سرکٹ انڈسٹری ڈویلپمنٹ اور میڈ اِن چائنا 2025 کے اقدام کو فروغ دینے کے لیے اپنے رہنما خطوط کے ذریعے امریکہ پر اپنا انحصار کم کرنے اور اپنی گھریلو سیمی کنڈکٹر صنعت کی ترقی کو تیز کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔دریں اثنا، تائیوان سیمی کنڈکٹر مینوفیکچرنگ کارپوریشن (TSMC) چینی اور امریکی دونوں فرموں کے لیے دنیا میں سب سے زیادہ جدید چپس تیار کرتی ہے۔